ایران،پاکستان کا علاقائی مسائل کے حل کیلئے باہمی مشاورت بڑھانے پر زور

اسلام آباد - ایرنا - ایرانی مجلس کے سنئیر رکن اور پاکستانی مشیر قومی سلامتی نے ایک ملاقات کے درمیان علاقائی مشکلات بالخصوص عالم اسلام کے مسائل کے حل کے لئے دونوں ممالک کے درمیان باہمی مشاورت کو بڑھانے کی ضرورت پر زور دیا.

يہ فيصلہ ايراني مجلس (پارليمنٹ) كي قومي سلامتي اور خارجہ پاليسي كميٹي كے سربراہ 'علاء الدين بروجردي' اور وزيراعظم پاكستان كے مشير قومي سلامتي جنرل (ر) 'ناصر خان جنجوعہ' كے درميان ايك ملاقات ميں كيا گيا.



اس موقع پر پاكستاني مشير قومي سلامتي نے گزشتہ جولائي ميں اپنے ايران كے دورے كا ذكر كرتے ہوئے كہا كہ ايراني قيادت كے ساتھ تعميري مذاكرات پوئے اور اس سے مثبت نتائج بھي برامد ہوئے.



اعلي ايراني ركن پارليمنٹ نے بھي دوطرفہ تعلقات كي مزيد مضبوطي كے لئے پاك،ايران اعلي وفود كے تبادلوں ميں اضافے پر زور ديا.



جنرل (ر) ناصر خان جنجوعہ نے نامور ايراني رہنما اور سابق صدر آيت اللہ ہاشمي رفسنجاني كے انتقال پر افسوس كا اظہار كرتے ہوئے كہا كہ اسلامي جمہوريہ ايران ہمارا اچھا اورہم دوست ملك ہے جس كے ساتھ ہم كثير الجہتي تعلقات بڑھانے كے خواہاں ہيں.



انہوں نے اس اميد كا اظہار كيا كہ ايران مخالف پابنديوں كے خاتمے كے بعد بالخصوص پاكستاني كي اندروني سيكورٹي ميں مزيد بہتري سے پاك،ايران گيس منصوبہ جلد مكمل ہوگا.



علاء الدين بروجردي گزشتہ بدھ كے روز ايك پارليماني وفد كي قيادت ميں تين روزہ دورے پر پاكستان پہنچے جس كا مقصد ايراني اسپيكر علي لاريجاني كي جانب سے پاكستان كي سينيٹ كے چيئرمين اور قومي اسمبلي كے اسپيكر كو ايران ميں منعقد ہونے والي عالمي فلسطين كانفرنس ميں شركت كے لئے دعوت نامہ پيش كرنا تھا.



بروجردي گزشتہ رات اسلام آباد ميں ايك اہم پريس كانفرنس كرنے كے بعد وطن واپس چلے گئے.



۲۷۴**