جوہری معاہدے سے ایرانی معاشرے میں خواتین کے کردار کو مزید فروغ ملے گا: ایران کی نائب صدر

تہران - ارنا - ایران کی خاتون نائب صدر برائے امور خواتین اور خاندان نے کہا ہے کہ جوہری معاہدے کے نفاذ سے ایرانی معاشرے میں خواتین کے کردار کے فروغ اور خاندانی امور کی بہتری کے لئے سازگار فضا قائم ہوگی.

ان خيالات كا اظہار' شہيندخت مولاوردي' نے ايران جوہري معاہدے كے نفاذ كي پہلي سالگرہ كے موقع پر ارنا نيوز ايجنسي كے ساتھ خصوصي گفتگو كرتے ہوئے كيا.



اس موقع پر انہوں نے كہا كہ جوہري معاہدے كي كاميابي كے ثمرات ايراني معاشرے كو بھي ملے ہيں اور اس كے مثبت نتائج مستقبل ميں بھي ديكھے جاسكيں گے.



مولاوردي نے كہا كہ ملك ميں افراط زر ميں نماياں كمي، معيشت كي مضبوطي، مختلف ممالك كے ساتھ كثيرالجہتي تعلقات كي توسيع اور ايران ميں غيرملكي سرمايہ كاري اور تجارتي لين دين ميں اضافہ، تاريخي جوہري معاہدے كي ديگر كاميابيوں ميں شامل ہيں.



ايران كي نائب صدر نے كہا كہ عالمي ظالمانہ پابنديوں كي وجہ سے ايران كي خواتين اور خانداني امور كے شعبوں پر بھي منفي اثرات پڑے مگر ان پابنديوں كے خاتمے سے موجودہ صورتحال ميں بہتري آئے گي.



انہوں نے بتايا كہ ايراني خواتين ملك كے مختلف شعبوں بالخصوص تعليم، اقتصادي، صحت اور خانداني امور كے حوالے سے اہم كردار ادا كر رہي ہيں.



٩٣٩٣*٢٧٤**