سپریم لیڈر کی ہدایات جوہری معاہدے کے لئے مشعل راہ ہیں: ایرانی وزیر دفاع

شہرکُرد - ارنا - ایران کے وزیر دفاع نے کہا ہے کہ جوہری معاہدہ ایک قومی دستاویز ہے اور اس حوالے سے قائد اسلامی انقلاب سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ ای کی ہدایات مشعل راہ ہونی چاہئیں.

ان خيالات كا اظہار بريگيڈيئر جنرل 'حسين دہقان' نے گزشتہ روز ايران كے صوبے 'چہارمحال و بختياري' كے اعلي حكام كے ساتھ مزاحمتي اقتصادي پاليسي كے حوالے سے منعقدہ اجلاس ميں خطاب كرتے ہوئے كيا.



اس موقع پر انہوں نے كہا كہ ايران جوہري معاہدہ ايك قومي اثاثہ ہے اور اس حوالے سے صرف حكومت اور پارليمنٹ ہي نہيں بلكہ تمام ادارے اس معاہدے پر عمل درآمد كے لئے كوشش كرني چاہئے.



انہوں نے بتايا كہ بعض حلقے جوہري معاہدے كو كم اہميت سمجھتے ہيں اور بعض حلقے اسے حجت تمام والا مسئلہ تسليم كرتے ہيں جبكہ ايران جوہري معاہدہ صرف ايك ہي فريق كا نہيں بلكہ پوري قوم كا ہے.



ايراني وزير دفاع نے بتايا كہ سپريم ليڈر جيسے حكيم رہنما، طاقتور مسلح افواج اور قوم كي اتحاد اور يكجہتي كي بدولت سے دشمن ہمارے خلاف جارحيت اور فوجي طاقت كے استعمال كي جرات نہيں ركھتا.



انہوں نے مزيد كہا كہ ايران نے مغرب كے ساتھ مذاكرات كركے پُرامن جوہري ٹيكنالوجي كے استعمال اور يورنيم كي افزودگي كے حق كو عالمي برادري سے منوايا اور آج ايران كا يہ حق تسليم كرليا گيا ہے.



وزير دفاع نے كہا كہ جوہري معاہدے كے تحت اسلامي جمہوريہ ايران نے اپنے تمام وعدوں پر عمل كيا ہے جبكہ امريكي اس مرحلے ميں خلاف ورزي كرتا رہا كيونكہ دشمن ہميشہ دشمن ہي رہتا ہے.



۲۷۴**