آیت اللہ رفسنجانی کے جنازے کا آغاز جامعہ تہران سے ہوگیا

تہران - ارنا - اعلی ایرانی رہنما اور سابق صدر مرحوم آیت اللہ 'اکبر ہاشمی رفسنجانی' کے جنازے کا آغاز لاکھوں سوگواروں کی موجودگی میں منگل کے روز تہران یونیورسٹی سے آغاز ہوگیا.

اعلي حكومتي، عسكري اور ديگر شعبوں سے منسلك حكام اور شخصيات مرحوم كے جنارے ميں شريك ہيں اور پروگرام كے مطابق جامعہ تہران ميں نمازہ جنازہ ادا كرنے كے بعد ان كے جسد خاكي كو تدفين كے لئے امام خميني (رہ) كي مقدس بارگاہ ميں لے جايا جائے گا.



قائد اسلامي انقلاب حضرت آيت اللہ سيد علي خامنہ اي كي امامت ميں مرحوم آيت اللہ رفسنجاني كا نماز جنازہ ادا كيا جائے گا.



نماز جنازے ميں صدر مملكت حسن روحاني ، عدليہ كے سربراہ، ايراني مجلس كے اسپيكر، اراكين پارليمنٹ، ماہرين اسمبلي كے نمائندگان، مجمع تشخصي مصلحت نظام كونسل كے ممبران اور اعلي صوبائي حكام شريك ہوں گے.



تفصيلات كے مطابق؛ اسلامي جمہوريہ ايران كے سنئير رہنما اور باني اسلامي انقلاب امام خميني (رہ) كے قريبي دوست آيت اللہ اكبر ہاشمي رفسنجاني گزشتہ اتوار كي رات ۸۲ سال كي عمر ميں تہران ميں انتقال فرما گئے.



آيت الله رفسنجاني اسلامي انقلاب كے باني امام خميني (ره) اور سپريم ليڈر حضرت آيت الله العظمي خامنه اي كے قريبي ساتهيوں ميں سے تهے. آپ ايران ميں سنہ 1989 سے 1997 تك صدارت كے عہدے پر فائز رہے تهے.



آيت اللہ ہاشمي رفسنجاني مجمع تشخيص مصلحت نظام كے سربراہ تهے جس كا كام پارليمان اور گارڈٰين كونسل كے درميان تنازعات كو حل كرنے كي كوشش كرنا ہے.



٢٧٤**