حفاظتی ٹیکوں کی پیداوار میں ایران دنیا کے 10 نامور ممالک میں شامل

کرج - ارنا - ایران کی رازی ریسرچ انسٹی ٹیوٹ کے سربراہ نے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران ویکسین (حفاظتی ٹیکوں) کی پیداوار میں دنیا کے 10 نامور ممالک میں شامل ہے.

يہ بات ڈاكٹر ' حميد كہرم ' نے اتوار كے روز صحافيوں كے ساتھ گفتگو كرتے ہوئے كہي.



اس موقع پر انہوں نے كہا كہ مشرق وسطي ميں ايران كي رازي انسٹي ٹيوٹ واحد ريسرچ ادارہ ہے جو انساني، لائيو سٹاك اور پولٹري كے ذريعے حفاظتي ٹيكوں كي كي پيداوار ميں سرگرم ہے.



اس موقع پر انہوں نے كہا كہ مشرق وسطے كے ممالك ميں سے پاكستان، تركي اور ملائيشيا صرف لائيوسٹاك ويكسين پيدا كر سكتے ہيں اور انساني اور پولٹري ويكسين كي پيدا كرنے ميں ناكام ہيں.



كہرم نے كہا كہ سيرم ريسرچ انسٹيٹيوٹ اور ايران كي رازي انساني، لائيوسٹاك اور پولٹري ويكسين كي پيدا كرنے ميں كامياب ہے اور دوسرے ممالك كے لئے ايك ماڈل سمجھا جاتا ہے.



انہوں نے اس بات پر زور ديا كہ اس انسٹيٹيوٹ انساني، لائيو سٹاك اور پولٹري كي سلامتي كي ضروريات كو فراہم كرسكتا ہے.



۹۳۹۳*۲۷۴**