ترکمن گیس تنازعہ/ایران اندرونی گیس کی پیداوار میں اضافہ کرے گا

تہران - ارنا - ترکمانستان کی کمپنی کی جانب سے غیرمعقول وجوہات پر ایران کو گیس برآمدات کی بندش کے بعد اسلامی جمہوریہ ایران نے اپنی اندرونی گیس کی پیداوار کو مزید بڑھانے کا فیصلہ کیا جس سے بیرونی گیس کی بندش کی کمی کو پورا کیا جائے گا.

يہ بات ايران كي قومي تيل كمپني كے نائب سربراہ 'محسن پاك نژاد' نے گزشتہ روز مركزي صوبوں ميں تعينات قومي تيل كے بورڈ آف ڈائريكٹرز كے نئے اراكين كے ساتھ ايك نشست سے خطاب كرتے ہوئے كہي.



اس موقع پر انہوں نے كہا كہ تركمن كمپني كي جانب سے گيس بندش كا ازالہ كرنے كے لئے ايران كے مركزي علاقوں سے گيس پيداوار كے حجم ميں 300 ملين كيوبك ميٹر تك بڑھايا جائے گا.



تفصيلات كے مطابق، تركمن گيس كمپني نے يكم جنوري سے ايران كو گيس برآمدات بند كردي اور دعوي كيا كہ ايران ايك ارب 80 كروڑ ڈالر كا نادہندہ ہے جبكہ اس سے پہلے دونوں ملكوں كے درميان مذاكرات طے پاگئے تھے اور تركمن فريق نے يقين دہاني كرائي تھي كے اس مسلئے كو باہمي مشاروت سے حل كيا جائے گا.



تركمن كمپني كے اس بلاجواز اقدام كے بعد ايران ميں ايك عوامي تحريك چلي جس ميں عوام نے ايك دوسرے كو گيس ميں بچت كرنے كي درخواست كي تا كہ بيروني گيس بندش كے بعد ملك ميں گيس كي قلت سے بچايا جاسكے.



اسلامي جمہوريہ ايران كي قومي تيل كمپني نے اعلان كيا ہے كہ تركمن گيس كمپني كے خلاف بين الاقوامي ثالثي عدالت ميں جائے گي.



۲۷۴**