روسی سینیٹر کی دہشت گردی کے خلاف تہران، ماسکو اور انقرہ کے تعاون کی تعریف

ماسکو - ارنا - روسی فیڈریشن کونسل کی کمیٹی برائے خارجہ امور کے چیئرمین نے کہا ہے کہ شامی بحران کے حوالے سے تہران، ماسکو اور انقرہ کا باہمی تعاون نہایت اہمیت کا حامل ہے.

روسي سركاري خبر رساں ادارے كو انٹرويو ديتے ہوئے كونستنتين كوسااچيو نے كہا كہ شام ميں جاري انساني بحران كو حل كرنے ميں تہران، ماسكو اور انقرہ كا مشتركہ تعاون بہت اہميت كا حامل ہے.



انہوں نے كہا كہ سہ فريقي مذاكرات كے دائرہ كار ميں شامي بحران كے سياسي حل كے پروگرام شامل ہيں.



انہوں نے كہا كہ 2017 ميں مغرب دوہري پاليسي اپنائے ہوئے ہے اور شام مخالف فورسز كي پشت پناہي كو روك دے تو شامي مسئلہ كے حل ميں دير نہيں لگے گي.



اسلامي جمہوريہ ايران، روس اور تركي كے وزرائے خارجہ نے 20 دسمبر 2016 كو ماسكو ميں ايك سہ فريقي اجلاس ميں اس بات پر اتفاق كيا كہ شام ميں جاري كشيدگي كے خاتمے اور حلب ميں امداد كي فراہمي تك باہمي تعاون كو جاري ركھا جائے گا.



271**