مسلح افواج کو ہمیشہ تیار رہنے کی ضرورت ہے: آيت الله خامنہ اي

تہران - ارنا - قائد اسلامی انقلاب حضرت آیت اللہ خامنہ ای نے ایرانی مسلح افواج کے ایمان، سائنسی و تکنیکی مہارت، تنظیمی نظم و ضبط کی مضبوطی پر زور دیتے ہوئے فرمایا ہے کہ وطن عزیز کی مسلح افواج فوج کو ہمیشہ ضرورت کے وقت مکمل تیار رہنے کی ضرورت ہے.

ان خيالات کا اظہار سپريم ليڈر حضرت آيت اللہ العظمي 'سيد علي خامنہ اي' نے بدھ کے روز فوجي يونيورسٹيوں کے گريجويٹ افسروں کے ساتھ ايک ملاقات ميں خطاب کرتے ہوئے کيا.



اس موقع پر انہوں نے وطن عزيز پر آٹھ سالہ جنگ مسلط کرنے کے اصل حقائق اور دشمن کي جارحيت کے خلاف دفاع مقدس کے قيمتي تجربات کو نوجوان نسل تک منتقل کرنے پر زور ديا.



سپريم ليڈر نے مزيد فرمايا کہ آج ايراني قوم اسلام، آزادي، اللہ کي حاکميت پر ايمان کي وجہ سے دُشمنوں کي سازشوں کو پس پا کرديا اور اس حوالے سے ممکنہ خطرات کو ٹالنے کے لئے ايراني مسلح افواج کو ہميشہ تيار رہنے ضروري ہے.



حضرت آيت اللہ خامنہ اي نے فرمايا کہ دفاع مقدس ايک مشکل امتحان تھا کہ تاہم اسلامي جمہوريہ ايران کي مسلح افواج نے اس امتحان ميں کامياب ہوئيں.



قائد اسلامي انقلاب نے مزيد فرمايا کہ سچ تو يہ ہے کہ آٹھ سالہ جنگ اسلامي نظام اور ايراني قوم کے لئے ايک عالمي جنگ تھي جس ميں بڑي طاقتيں ملوث تھيں.



انہوں نے فرمايا آج پوري دنيا، دوست اور دشمن دونوں اپنے زبان اور دل کيساتھ ايراني قوم اور اسلامي نظام کے عظمت، جرات اور ہوشياري تسليم کر رہے ہيں.



انہوں نے اس بات پر زور ديا کہ آج وطن عزيز کو تمام حلقوں بالخصوص باايمان افراد کے درميان مضبوط وحدت اور يکجہتي کي ضرورت ہے.



انہوں نے فرمايا کہ اسلامي جمہوريہ ايران قوموں کے لئے پيشرفت اور عزت و وقار کا نمونہ ہے.



آپ نے شہدا کي يادگار کے سامنے کھڑے ہوکر وطن کے سرفراز شہيدوں کے لئے بلندي درجات کي دعا کي.





٩٣٩٣*٢٧٤**