ایرانی صدر کا سوئٹزر لینڈ کیساتھ اقتصادی تعاون بڑھانے پر زور

نیو یارک - ارنا - ایرانی صدر نے ایران اور سوئٹزر لینڈ کے باہمی تعاون کو مزید توسیع دینے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ جوہری معاہدے کے بعد اب وقت آگیا ہے کہ اقتصادی تعاون کی راہ میں موجود رکاوٹوں کا خاتمہ کرتے ہوئے دونوں ممالک باہمی شراکت داری کو فروغ دیں.

ان خيالات كا اظہار اسلامي جمہوريہ ايران كے صدر مملكت 'حسن روحاني' نے نيو يارك ميں منعقدہ اقوام متحدہ كے 71ويں سالانہ اجلاس كے موقع پر سوئٹزرلينڈ كنفيڈريشن كے صدر 'يوہان شنائيڈر' كے ساتھ ايك ملاقات ميں گفتگو كرتے ہوئے كيا.



صدر روحاني نے اس موقع پر كہا كہ جوہري معاہدے كے نفاذ كے بعد ايران اور سوئٹزرلينڈ بينكنگ اور مالياتي شعبوں ميں باہمي تعاون كے ذريعے دونوں ملكوں كے تعلقات كو مزيد توسيع دے سكيں گے.



ايران اور سوئس بينكوں كے درميان تعاون كي بحالي كا مطالبہ كرتے ہوئے انہوں نے اس بات پر زور ديا كہ اقتصادي ميدان بالخصوص مختلف شعبوں ميں دوطرفہ تعاون كو بڑھانے كيلئے ايران اور سوئٹزرلينڈ كے درميان اچھے مواقع موجود ہيں.



ايراني صدر نے مزيد كہا كہ يوقرپي حكام بالخصوص سوئس حكومت يورپي بينكوں اور انشورنش كمپنيوں كے ايران كے ساتھ تعاون كے لئے سازگار فضا فراہم كريں اور غيرملكي اداروں كے لئے مشكلات سے دور ماحول كو يقيني بنائيں.



انہوں نے كہا كہ ايران ميں ريلوے، سڑكوں كي تعمير اور بندرگاہوں كے فروغ كے لئے سرمايہ كاري كے وافر مواقع ميسر ہيں اور اس كے علاوہ ايران اور سوئٹزرلينڈ علاقائي منصوبوں ميں بھي مشتركہ سرمايہ كاري كرسكتے ہيں.



اس موقع پر سوئس صدر نے كہا كہ ان كا ملك اسلامي جمہوريہ ايران كے ساتھ اقتصادي تعاون كي توسيع بالخصوص مالي اور بينكنگ شعبوں ميں دوطرفہ تعلقات كو بڑھانے كا خواہاں ہے.



انہوں نے اس بات پر زور ديا كہ سوئٹزرلينڈ ايران كے ساتھ مالي اور اقتصادي ميدان ميں مشتركہ سرگرميوں كو فروغ دينے كے لئے آمادہ ہے.



سوئٹزرلينڈ كنفيڈريشن كے صدر يوہان شنائيڈر نے مزيد كہا كہ ان كا ملك جديد ٹيكنالوجي كي پيداوار اور پُرامن جوہري پلانٹس كي حفاظت كے شعبوں ميں ايران كے ساتھ تعاون كا خيرمقدم كرتا ہے.





۲۷۴**