شامی صورتحال پر تعمیری مؤقف اپنانے پر ایران کی روسی کردار کی تعریف

تہران - ارنا - سنئیر ایرانی سفارتکار نے شام کی موجودہ صورتحال پر روسی قیادت کے کردار اور تعمیری مؤقف کی تعریف کرتے ہوئے کہا ہے کہ شام میں جنگ بندی معاہدے اور شامی حکومت کے تعاون کے باوجود اس حوالے سے امریکہ اپنے وعدوں پر عمل نہیں کر رہا.

يہ بات ايراني مجلس (پارليمنٹ) كے اسپيكر كے مشير خصوصي برائے بين الاقوامي امور 'حسين اميرعبدالہيان' نے اپنے ايك بيان ميں كہي.



اس موقع پر انہوں نے كہا كہ شام ميں موجود النصرہ فرنٹ دہشتگرد تنظيم كو امريكي پشت پناہي حاصل ہے اور امريكہ نے اس دہشت گرد گروہ جس كا نام اقوام متحدہ كي بليك لسٹ ميں موجود ہے، كو كبھي نشانہ نہيں بنايا ہے.



انہوں نے مزيد كہا كہ امريكہ شام ميں آئيني صدر بشار الاسد كو ہٹانے ميں بھرپور كوشش كر رہا ہے جبكہ النصرہ فرنٹ جيسي دہشت گرد تنظيم اپنے نام كو تبديل كركے اپنے دوسرے غيرانساني اور دہشتگرد رفقائے كار بچا رہي ہے.



سنئير ايراني سفارتكار نے اس بات پر زور ديا كہا كہ تہران اور ماسكو دہشت گردوں كے خلاف جنگ ميں شامي حكومت، صدر، فوج اور قوم كي حمايت كرتے رہيں گے.





۹۳۹۳*۲۷۴**