بوشہر جوہری پلانٹ کی تعمیر،بجلی کی پیداوار میں 1057 میگاواٹ کا اضافہ متوقع

بوشہر - ارنا - ایران کے جنوبی علاقے بوشہر ایٹمی بجلی گھر کے دو نئے یونٹس کی تعمیر سے توقع کی جاتی ہے ملک میں بجلی کی پیداوار 1057 میگاواٹ تک اضافہ ہوجائے گا.

يہ بات بوشہر جوہري پاور پلانٹ كے ڈائريكٹر برائے پلاننگ 'محمود جعفري' نے سنئير ايراني نائب صدر كے دورے كے موقع پر ارنا كے ساتھ گفتگو كرتے ہوئے كہي.



سنئير نائب ايراني صدر اسحاق جہانگيري نے ہفتے كے روز بوشہر جوہري پاور پلانٹ كے دو نئے يونٹس كے باقاعدہ كام كے آغاز كا افتتاح كيا.



اس حوالے سے محمود جعفري نے كہا كہ بوشہر جوہري پلانٹ كي يونٹس كي تعمير سے ملك ميں مزيد 1057 بجلي كي پيداوار يقيني بن جائے گي.



انہوں نے مزيد كہا كہ نئے جوہري بجلي گھروں كي تعمير سے 22 ملين بيرل خام تيل ميں بچت اور 21 ملين ٹن گرين ہاؤس گيسوں كي آلودگي كي روك تھام ممكن ہوگي.



بوشہر ايٹمي پاورل پلانٹ كے نئے تعميراتي منصوبوں پر روسي كمپني نے كام كيا ہے اور كمپني كے حكام نے كہا ہے كہ كہ وہ بوشہر ايٹمي بجلي گھر كے نئے يونٹس فوكوشيما ايٹمي گھر جيسے واقعات سے اجتناب كے تجربے كي بنياد پر حفاظتي معيار كے ساتھ تعمير ہوئے ہيں.



افتتاحي تقريب ميں روسي جوہري وفد كے سربراہ 'سرگئي كريينكو' روسي جوہري كمپني كے ڈائريكٹر 'والري لي مارنكو' بھي شريك تھے.





۹۳۹۳*۲۷۴**